فیڈریشن آف انٹرنیشنل کرکٹرز ایسوسی ایشن نے اپنی رپورٹ میں تجویز دی ہے کہ سکیورٹی وجوہات کی بنا پر غیر ملکی کھلاڑی لاہور میں منعقد ہونے والے 2017 کے پاکستان سپر لیگ کے فائنل میں شرکت سے گریز کریں۔

فیڈریشن آف انٹرنیشنل کرکٹرز ایسوسی ایشن (ایف آئی سی اے) کی تازہ رپورٹ ایسے وقت آئی ہے جب چند روز قبل ہی پاکستان کرکٹ بورڈ کی ایگزیکٹیو کمیٹی کے چیئرمین نجم سیٹھی نے کہا تھا کہ رواں سال ہونے والی دوسری پاکستان سپر لیگ کا فائنل لاہور میں کھیلا جائے گا۔

ایف آئی سی اے کی رپورٹ میں متنبہ کیا گیا ہے کہ پاکستان میں سکیورٹی اب بھی کافی مسئلہ ہے اور کھلاڑیوں کی سکیورٹی اور سیفٹی کی گارنٹی نہیں دی جاسکتی۔

یاد رہے کہ ایف آئی سی اے کے پاس یہ اختیارات نہیں ہیں کہ وہ کسی کھلاڑی کو کسی بھی ملک میں کھیلنے سے روک سکے تاہم اس کی رپورٹ تمام کھلاڑیوں، ایجنٹوں اور کھلاڑیوں کی ایسوسی ایشنز کو بھیجی جاتی ہے۔

اور اس کی رپورٹ چند کرکٹ بورڈز پر اثر انداز ہو اور وہ اپنے کھلاڑیوں کو کھیلنے کی اجازت دینے سے انکار کر دیں۔

ایف آئی سی اے کی رپورٹ میں کھلاڑیوں سے کہا گیا ہے کہ وہ ضرور اپنی بیمہ پالیسیاں دیکھیں کیونکہ ہو سکتا ہے کہ ان کی بیمہ پالیسیاں پاکستان میں کھیلنے سے ختم ہو جائیں۔

نجم سیٹھیتصویر کے کاپی رائٹAFP

رپورٹ کے مطابق 'پاکستان میں اب بھی دہشت گرد کارروائیاں ہو رہی ہیں اور مغربی ممالک سے تعلق رکھنے والے افراد کو ماضی میں براہ راست نشانہ بنایا گیا ہے۔ اور حکومتی ایجنسیوں اور سفارتی حلقوں کی جانب سے جاری کی جانے والی ایڈوائزری کے مطابق ایسے حملے جاری رہنے کے امکانات ہیں۔'

یاد رہے کہ نجم سیٹھی کا کہنا تھا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کو حکومت کی جانب سے اس ایونٹ کے لیے مکمل حمایت اور مدد حاصل ہے۔

انھوں نے کہا کہ 'اس قسم کے فائنل میچ کے لیے لاہور سب سے محفوظ مقام ہے اور میں سو فیصد یقین کے ساتھ کہہ رہا ہوں کہ پاکستان سپر لیگ کا فائنل قذافی سٹیڈیم لاہور میں ہوگا۔'

پاکستان سپر لیگ 2 کا آغاز رواں سال نو فروری سے متحدہ عرب امارات میں ہوگا اور فائنل سات مارچ کو کھیلا جائے گا۔

رواں سال ہونے والی پاکستان سپر لیگ میں گذشتہ سال کے مقابلے میں میچز کی تعداد بھی 16 سے بڑھا کر 18 کر دی گئی ہے۔


News Source: http://coddu.com/short/fM54

Post your comment

Your name:


Your comment:


Confirm:



* Please keep your comments clean. Max 400 chars.

Comments

Be the first to comment