Join Us On Facebook

Please Wait 10 Seconds...!!!Skip

859 بڑے ٹیکس دہندگان بھی آڈٹ کیلیے منتخب

Published: Sep 28, 2013 Filed under: Latest Beats Views: 204 Tags: federal, board, revenue, tex, audit, express news, pakistan, fbr, secretary, ordinance, business
[+] [a] [-] Related Beats Comments

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے کمپیوٹرائزڈ قرعہ اندازی کے ذریعے آڈٹ کے لیے منتخب کرنے کے بعد لارج ٹیکس پیئر یونٹس میں رجسٹرڈ بڑے ٹیکس دہندگان کا بھی الگ سے آڈٹ شروع کر دیا ہے۔

اس ضمن میں ’’ایکسپریس‘‘ کو دستیاب دستاویز کے مطابق ایف بی آر کے سیکریٹری ٹیکس پیئرزآڈٹ فیصل مشتاق ڈار کے دستخط سے جاری ہونے والے لیٹر میں کہا گیا ہے کہ آئی ایم ایف کے ساتھ طے پانے والے پروگرام میں جو اسٹرکچرل بنچ مارک متعین ہوا ہے اس کے تحت کمپیوٹرائزڈ قرعہ اندازی کے ذریعے 41 ہزار 727 کارپوریٹ و نان کارپوریٹ ٹیکس دہندگان کو انکم ٹیکس، سیلز ٹیکس اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کے آڈٹ کے لیے منتخب کیا گیا جو مجموعی ٹیکس گوشواروں کے 5 فیصد کے برابر ہیں جنہیں اب نوٹس جاری کیے جارہے ہیں لیکن اسٹرکچرل بنچ مارک میں چونکہ یہ بھی طے ہواہے کہ لارج ٹیکس پیئر یونٹس میں رجسٹرڈ مجموعی بڑے ٹیکس دہندگان میں سے 10فیصد کو رسک بیسڈ پیرامیٹرز کی بنیاد پر آڈٹ کے لیے الگ سے منتخب کیا جائیگا۔

اس لیے ملک بھر میں قائم لارج ٹیکس پیئر یونٹس میں مجموعی طور پر 859 بڑے ٹیکس دہندگان کو انکم ٹیکس،سیلز ٹیکس اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کے آڈٹ کے لیے الگ سے منتخب کیا گیا ہے جس کے تحت کارپوریٹ و نان کارپوریٹ سیکٹر سے تعلق رکھنے والے 486بڑے ٹیکس دہندگان کا انکم ٹیکس آڈٹ اور 364 کا سیلز ٹیکس آڈٹ جبکہ 9کارپوریٹ ٹیکس دہندگان کا فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کا آڈٹ کیا جائیگا، مذکورہ بڑے ٹیکس دہندگان کو انکم ٹیکس آرڈیننس2001 کی سیکشن177، سیلز ٹیکس ایکٹ 1990کی سیکشن 25 اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی ایکٹ کی سیکشن14 کے تحت حاصل اختیارات کو استعمال کرتے ہوئے الگ سے آڈٹ کیلیے منتخب کیا گیا ہے۔ دستاویز میں کہا گیاکہ 859 بڑے ٹیکس دہندگان کو الگ سے آڈٹ کے لیے منتخب کرکے آئی ایم ایف کی ایک اور اہم شرط پوری کردی گئی ہے۔

Post your comment

Your name:


Your comment:


Confirm:



* Please keep your comments clean. Max 400 chars.

Comments

Be the first to comment