Join Us On Facebook

Please Wait 10 Seconds...!!!Skip

‮پشاور: خودکش حملوں میں ہلاک شدگان کی تعداد 80 ہو گئی

Published: Sep 23, 2013 Filed under: Latest Beats Views: 172 Tags: peshawar, pakistan, church, blast, kpk cm, 80 dead
[+] [a] [-] Related Beats Comments
خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور میں ایک گرجاگھر پر اتوار کو ہونے والے دو خودکش حملوں میں ہلاک شدگان کی تعداد 80 ہو گئی ہے جبکہ 50 سے زائد زخمیوں میں سے 10 کی حالت نازک ہ
یہ دھماکے اتوار کی صبح اس وقت ہوئے جب مسیحی برادری سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں افراد دعائیہ تقریب کے لیے آل سینٹس کیتھیڈرل نامی چرچ میں جمع تھے

حکام کے مطابق لوگ عبادت کے بعد گرجا گھر سے باہر نکل رہے تھے کہ دھماکے ہوئے۔ عینی شاہدین کے مطابق دھماکوں کے وقت جائے وقوع پر پانچ سے چھ سو افراد موجود تھے۔

بی بی سی اردو کے نامہ نگار کے مطابق پشاور پولیس کا کہنا ہے کہ ان دھماکوں میں 80 افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہو چکی ہے جبکہ ایسی اطلاعات بھی ہیں کہ موقع پر ہی دم توڑ دینے والے مزید آٹھ سے دس افراد کی لاشوں کو ہسپتال لایا ہی نہیں گیا۔

لیڈی ریڈنگ ہسپتال کے حکام کا کہنا ہے کہ ہسپتال میں کل 206 افراد لائے گئے جن میں سے 78 چل بسے جبکہ 56 کو ابتدائی طبی امداد کے بعد فارغ کر دیا گیا اور باقی زخمی ابھی ہسپتال میں ہیں جن میں سے دس کی حالت نازک ہے

حکام کے مطابق مرنے ولوں میں چونتیس خواتین اور سات بچے بھی شامل ہیں۔ نامہ نگار عزیز اللہ خان کے مطابق خود کش حملہ آوروں نے چرچ کے داخلی دروازے کے قریب جس مقام پر دھماکے کیے وہاں دیوار کے ساتھ بڑی تعداد میں خواتین اور بچے کھڑے تھے کیونکہ اس وقت وہاں کھانا تقسیم ہو رہا تھا۔

ان دھماکوں کے عینی شاہدین نے بی بی سی اردو کو بتایا کہ دو خودکش حملہ آور چرچ کے بڑے دروازے سے داخل ہوئے تھے اور انہوں نے تقریباً دو منٹ کے وقفے سے اپنے آپ کو اڑایا۔ دونوں حملہ آوروں کے درمیان فاصلہ پانچ سے چھ فٹ تک تھا اور چرچ کے صحن میں اس کے واضح نشانات دیکھے جا سکتے ہیں۔

ادھر ہلاک شدگان کی تدفین کا عمل اتوار کی رات بھر جاری رہا اور شہر کے تین قبرستانوں وزیر باغ، گورا قبرستان اور شریف آباد قبرستان میں 80 افراد کو سپردِ خاک کر دیا گیا ہ

وفاقی اور خیبر پختونخوا کی صوبائی حکومت نے اس واقعے پر تین روزہ سوگ کا اعلان کیا ہے جبکہ ملک کے مشنری سکول بھی تین دن تک بند رہیں گے۔

یہ حملہ پاکستان کی تاریخ میں عیسائی برادری پر ہونے والے بدترین حملوں میں سے ایک ہے اور دھماکوں میں ہلاکتوں کے خلاف ملک کے مختلف شہروں میں مسیحیوں نے مظاہرے بھی کیے ہیں


Post your comment

Your name:


Your comment:


Confirm:



* Please keep your comments clean. Max 400 chars.

Comments

Be the first to comment