Join Us On Facebook

Please Wait 10 Seconds...!!!Skip

کیا 30 سال کے بعد حاملہ ہونا واقعی مشکل ہے؟

Published: Sep 20, 2013 Filed under: Latest Beats Views: 323 Tags: Pakistan, international, British, UK, pregnant, pregnancy, conceive, france, dudenson
[+] [a] [-] Related Beats Comments
کہا جاتا ہے کہ پنتیس سال سے زیادہ عمر کی تین میں سے ایک خاتون ایک سال کے عرصے میں حاملہ نہیں ہو پاتی ہے

25 سال کی عمر سے بڑی خواتین ان سرگوشیوں سے واقف ہوں گی جو خاندان کی بزرگ خواتین ان کے حاملہ ہونے کے بارے میں کرتی ہیں۔

لیکن آپ کو کیسا لگےگا اگر آپ کو یہ معلوم ہوجائے کہ عمر کے بڑھنے کے ساتھ تولیدی صلاحیت میں کمی واقع ہونے کے بارے میں ہم جو سنتے آئے ہیں وہ سچ نہیں ہے۔

اکثر کہا جاتا ہے کہ 35 سال سے زیادہ عمر کی تین میں سے ایک خاتون کوشش کرنے کے ایک سال کے عرصے میں حاملہ نہیں ہو پاتی ہیں۔

34 سالہ جین ٹوینج امریکہ کی سان ڈیاگو یونیورسٹی میں ماہر نفسیات ہیں۔ انہوں نے حال ہی میں دوبارہ شادی کی اور وہ فیملی شروع کرنا چاہتی تھیں کہ ان کے ڈاکٹر نے انہیں یہی بات بتائی۔

ان کا کہنا ہے ’میں یہ سن کر ڈر گئی جس طرح کہ وہ تمام خواتین خوف زدہ ہو جاتی ہوں گی جو 30 سال سے زیادہ عمر کی ہیں۔‘

وہ یہ جاننا چاہتی تھیں کہ آخر یہ اعداد و شمار آئے کہاں سے ہیں اور اس جستجو میں انہوں نے کچھ حیران کن باتیں دریافت کیں۔

وہ بتاتی ہیں ’وہ اعداد و شمار جنہیں بنیاد بنا کر یہ بات کہی جاتی ہے وہ دراصل فرانس میں 17ویں صدی میں اکٹھے کیے گئے تھے۔ گرجا گھروں سے پیدائش کے ریکارڈ اکٹھے کیے گئے جس سے وہ اس نتیجے پر پہنچے کہ ایک خاص عمر کے بعد حاملہ ہونا کتنا ممکن ہے۔‘

لیکن یہ ریکارڈ ان خواتین کے تھے جنہیں جدید طبی سہولیات، خوراک اور یہاں تک کہ بجلی کی سہولت بھی میسر نہیں تھی۔

لیکن آج کے دور کی تحقیق سے اس سے قدرے مختلف نتائج سامنے آئے ہیں۔

اس ضمن میں زیادہ تر ذکر ڈیوڈ ڈنسن کی تحقیق کا کیا جاتا ہے جو 2004 میں شائع کی گئی تھی۔ اس تحقیق میں 35 سے 39 سال کی 82 فیصد خواتین ایک سال کے اندر حاملہ ہوئیں۔

لیکن کیا ہم اس تحقیق میں اعتماد کر سکتے ہیں کہ یہ درست ہے؟

برطانیہ کے نیشنل ہیلتھ انسٹی ٹیوٹ اور کیئر ایکسیلینس (نائس) کی فرٹلیٹی گائیڈلائن ڈویلپمینٹ گروپ کے ڈیوڈ جیمز کا جواب ہے کہ ہم اس پر اعتماد کر سکتے ہیں۔

وہ کہتے ہیں ’یہ تحقیق زیادہ پرانی نہیں جس میں یورپ کے سات ممالک سے 780 خواتین نے حصہ لیا تھا۔ سب سے اہم بات یہ ہے کہ یہ وہ خواتین تھیں جو حاملہ ہونے کی کوشش کر رہی تھیں۔‘

جیمز کہتے ہیں کہ ان تاریخی اعداد و شمار کا مسئلہ یہ ہے کہ شاید وہ خواتین حاملہ ہونے کی کوشش کر ہی نہ رہی ہوں۔

وہ کہتے ہیں ’عمر بڑھنے کے ساتھ جنسی تعلقات کی شرح میں بھی کمی آجاتی ہے۔‘

ڈنسن تحقیق سے جو ایک اور نتیجہ سامنے آیا وہ یہ تھا کہ تولیدی صلاحیت عمر کے ساتھ کم ہوتی ہے لیکن اس رفتار سے نہیں جو ہم سمجھتے رہے ہیں

اس تحقیق کے مطابق 27 سے 34 سال کی عمر کی خواتین میں 82 فیصد کے حاملہ ہونے کا تناسب 35 سے 39 سال کی عمر کی خواتین میں 82 فیصد کے تناسب سے کچھ ہی زیادہ ہے۔

لیکن عمر کے ان حصوں کے بعد تصویر کچھ زیادہ واضح نہیں۔

جیمز کہتے ہیں کہ ’جو قلیل اعداد و شمار ہمارے پاس ہیں اس سے پتہ چلتا ہے کہ تولیدی صلاحیت 40 سال کی عمر میں بہت کم ہو جاتی ہے۔ لیکن اگر بعض معروف افراد کے کیسز پر نظر ڈالیں تو معلوم موتا ہے کہ 40 سال کی عمر کی بعد بھی حاملہ ہونا ناممکن نہیں ہے۔‘

جیمز کا کہنا ہے کہ ایسے شواہد بھی موجود ہیں کہ خواتین کی تولیدی صلاحیت میں بہتری آرہی ہے۔

جیمز کہ کہنا ہے کہ ان کے ادارے کی تولیدی صلاحیت پر تازہ ترین گائیڈ لائنز کے مطابق 40 سال کی عمر میں قدرتی طور پر حاملہ ہونے کے مواقع اب پہلے سے زیادہ ہیں۔

Post your comment

Your name:


Your comment:


Confirm:



* Please keep your comments clean. Max 400 chars.

Comments

Be the first to comment