Join Us On Facebook

Please Wait 10 Seconds...!!!Skip

نائیجریا: کالج پر حملہ، پچاس طلبا ہلاک

Published: Sep 30, 2013 Filed under: Latest Beats Views: 193 Tags: nigeria, aboja, college, attack, africa, boko haram
[+] [a] [-] Related Beats Comments

نائیجریا میں مشتبہ اسلامی شدت پسندوں نے ملک کے شمال جنوبی حصے میں ایک کالج پر حملے کر کے کم سے کم پچاس طلبا کو ہلاک کر دیا۔

یہ حملہ نائجیریا کی ریاست یوب میں واقع کالج آف ایگری کلچر میں اس وقت کیا گیا جب طلبا اپنی خواب گاہ میں سو رہے تھے۔

نائیجریا کا شمال مشرقی حصہ اسلامی شدت پسند گروپ بوکو حرام کے جنگجوؤں کی کارروائیوں کے باعث ہنگامی حالت میں ہے

خیال رہے کہ بوکو حرام نائجیریا کی حکومت کا تختہ الٹ کر وہاں ایک اسلامی ریاست قائم کرنا چاہتی ہے اور اس مقصد کے لیے اس نے سکولوں پر متعدد حملے کیے ہیں۔

اتوار کو کیے جانے والے تازہ حملے میں ہلاکتوں کی تعداد میں تضاد پایا جاتا ہے تاہم ایک مقامی سیاسی رہنما نے بی بی سی کو بتایا کہ حملے میں پچاس طلبا ہلاک ہوئے۔

سیاسی رہنما کے مطابق نائجیریا کی ریاست یوب کے ایک ہسپتال میں دو ویگنوں میں طلبا کی لاشیں لائی گئیں۔

خبر رساں ایجنسی رائیٹرز نے ایک عینی شاید کے حوالے سے بتایا کہ ہسپتال میں چالیس لاشیں لائی گئیں۔

کالج کے ایک اعلی اہلکار نے خبر رساں ایجنسی اے پی کو بتایا کہ مرنے والوں کی تعداد کم سے کم پچاس ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سکیورٹی فورسز کو مذید لاشیں بھی ملی ہیں جبکہ ایک ہزار سے زائد طلبا کالج کیمپس سے بھاگ گئے ہیں۔

نائجیریا کی فوج کے ایک ذریعہ نے اے پی کو بتایا کہ سپاہیوں نے بیالیس لاشوں کو اکھٹا کیا۔

نائجیریا کی فوج کے ترجمان نے اے ایف پی کو بتایا کے حملہ آوروں نے کالج کی کلاس رومز کو بھی جلا دیا۔

خیال رہے کہ نائیجریا کے صدر گڈ لک جوناتھن نے بوکو حرام کے خلاف آپریشن کرنے کا حکم دیا تھا اور چودہ مئی سے ملک کے شمالی مشرقی حصے میں ہنگامی حالت نافذ کی جا چکی ہے۔

بوکو حرام نے جون میں بھی اسی علاقے کے دو سکولوں پر حملے کیے تھے جس کے نتیجے میں طلبا اور اساتذہ سمیت بائیس افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

گذشتہ ماہ نائجیریا کی فوج کے ترجمان نے کہا تھا کہ بوکوحرام کے سربراہ اور اسلامی شدت پسند رہنما ابوبکر شیکاو ممکنہ طور پر سیکورٹی فورسز کے ساتھ مقابلے میں ہلاک ہو گئے ہیں۔

نائجیریا میں 2010 پرتشدد واقعات میں ابھی تک 2000 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جن میں سے اکثر واقعات کا الزام بوکوحرام پر لگایا جاتا ہے

مئی میں نائجیریا کی فوج نے کہا تھا کہ ملک کے شمال مغرب میں فوجی آپریشن کی وجہ سے بوکو حرام شدت پسندوں کو شدید نقصان پہنچا ہے اور وہ بڑی تعداد میں علاقہ چھوڑ رہے ہیں۔

http://www.bbc.co.uk/urdu/world/2013/09/130929_nigeria_attacks_rwa.shtml

Post your comment

Your name:


Your comment:


Confirm:



* Please keep your comments clean. Max 400 chars.

Comments

Be the first to comment