Join Us On Facebook

Please Wait 10 Seconds...!!!Skip

بلوچستان میں زلزلے سے جاں بحق افراد کی تعداد 348 سے تجاوز کرگئی، درجنوں لاپتہ

Published: Sep 25, 2013 Filed under: Latest Beats Views: 181 Tags: balochistan, earthquake, pakistan, gawadar, turbat, sindh, karachi, quetta, chaghi, panjgoor
[+] [a] [-] Related Beats Comments

کوئٹہ:گزشتہ روز آنے والے زلزلے سے بلوچستان میں جاں بحق افراد کی تعداد 348 سے تجاوز کرگئی ہے جبکہ درجنوں لاپتہ ہیں۔

گزشتہ روز سندھ اور بلوچستان کے مختلف علاقوں می آنے والے زلزلے کی تباہ کاریوں میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے، زلزلے سے سندھ میں جانی نقصان نہیں ہوا تاہم بلوچستان کے 7 اضلاع خضدار، آواران، پنجگور،تربت، چاغی، گوادراور کیچ میں بڑی تباہی ہوئی ہے، سب سے زیادہ تباہی آواران میں ہوئی ہے جہاں سیکڑوں مکان و عمارات، سڑکیں اور مواصلاتی نظام تباہ ہوا ہے۔ عمارتوں کے ملبے سے اب تک 210 افراد کی لاشیں نکالی جاچکی ہیں جن میں سے 100 افراد کی لاشیں مالار جبکہ 55 مشکے نکالی گئی ہیں، اس کے علاوہ ضلع کیچ میں زلزلے سے جاں بحق افراد کی تعداد 30 ہوگئی ہے۔ خضدار، پنجگور،تربت، چاغی اور گوادر  میں بھی جانی اور مالی نقصان ہوا ہے۔

زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں جاری ہیں، صوبائی حکومت ، مقامی انتظامیہ اور صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے علاوہ مسلح افواج اور ایف سی کے اہلکار بھی امدادی سرگرمیوں میں مصروف ہیں۔ بلوچستان حکومت نے سب سے ضلع آواران میں فوری ایمر جنسی نافذ کردی ہے۔ بلوچستان حکومت کے ترجمان جان محمد بلیدی کا کہنا ہے کہ امدادی کارروائیوں میں فوج، ایف سی، پولیس اور لیویز حصہ لے رہی ہے،ضلع آواران میں سیکیورٹی کا کوئی مسئلہ نہیں ہے، امدادی کاموں میمصروف اہلکاروں اور رضاکاروں کے تحفظ کے لئے فول پروف انتظامات کئے گئے ہیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق گزشتہ روز بلوچستان میں آنے والے زلزلے سے بڑے پیمانے پر ہونے والی تباہی سے متاثر ہو نے والے علاقوں میں امدادی کاروائیوں میں حصہ لینے کے لئے گزشتہ رات ایک ہزار جوانوں کو بھیجا گیا۔ اس کے علاوہ  600جوانوں اور افسران پر مشتمل پاک فوج کا خصوصی قافلہ کراچی سے روانہ ہو گیا ہے۔ فوجی قافلے میں ایک فیلڈ اسپتال، ڈاکٹرز اور دیگر طبی عملہ  شامل ہے، یہ عملہ متاثرہ علاقے میں پہلے سے موجود فوجی جوانوں کے ساتھ مل کر امدادی کاروائیوں میں حصہ لے گا جبکہ مزید فوجی دستےآج کراچی،کوئٹہ اورخضدارسے بھیجےجائیں گے، اس کے علاوہ ایف سی کی ریسکیو ٹیم آواران کے گاؤں لاباش میں امدادی کاموں میں مصروف ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز شام 4 بج 29 منٹ پر 7.8 شدت کے زلزلے سے کراچی سندھ اور بلوچستان کو ہلا کر رکھ دیا تھا، زلزلے کا مرکز خضدار سے 120 کلومیٹر دور مغرب میں زمین کے 10 کلو میٹر اندر تھا۔

http://www.express.pk/story/179026/

Post your comment

Your name:


Your comment:


Confirm:



* Please keep your comments clean. Max 400 chars.

Comments

Be the first to comment