نیو یارک میں گزشتہ روز پوری دنیا کا میڈیا ایک ایسے منظر کے تجسس میں تھا جس سے عالمی سیاست نئی کروٹ لے سکتی تھی کئی روز سے امریکی اور ایرانی صدور میں مصافحے کا چرچا تھا

نیو یارک(دنیا رپورٹ) توقع یہ تھی کہ چونکہ دونوں ممالک میں اختلافات کی خلیج کم ہو رہی ہے تو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے ظہرانے میں دونوں صدور کا آمنا سامنا ہو گا اور وہ ایک دوسرے سے ہاتھ ملا کر سب کو حیران کر دینگے لیکن ایسا نہ ہوا ایرانی صدر کی جانب سے جواز پیش کیا گیا کہ چونکہ وہاں شراب بھی پیش کی جانی تھی لہٰذا وہ گئے ہی نہیں ۔ تاہم ان کے معاونین کا کہنا ہے کہ ایران کے موجودہ سیاسی حالات ابھی ایسے مصافحے کی اجازت نہیں دیتے دوسری جانب وائٹ ہاؤس کے ترجمان نے بیان دیا کہ صدر کو آمنا سامنا نہ ہونے سے مایوسی نہیں ہوئی اب نہیں تو پھر کبھی سہی۔ تہران میں امریکی صحافی نے اس صورتحال پر ٹویٹ کیا کہ انتظار ختم ، حسن اور حسین مل نہیں سکے ۔ واضح رہے کہ امریکی صدر کا پورا نام باراک حسین اوباما اور ان کے ایرانی ہم منصب کا حسن روحانی ہے

Post your comment

Your name:


Your comment:


Confirm:



* Please keep your comments clean. Max 400 chars.

Comments

Be the first to comment