Join Us On Facebook

Please Wait 10 Seconds...!!!Skip

میرا سلطان نہیں تیرا سلطان - حسن نثار

Published: Oct 22, 2013 Filed under: Hassan Nisar Views: 1159 Tags: hassan nisar, choraha, jang, column, mera sultan, turkey
[+] [a] [-] Related Beats Comments
میرا سلطان پاکستان میں کیسی کیسی دودھ کی نہریں بہا رہا ہے اور اس حکومت کے 6 ماہ پورے ہونے تک عوام کی چیخیں مریخ تک سنائی دیں گی

Post your comment

Your name:


Your comment:


Confirm:



* Please keep your comments clean. Max 400 chars.

Comments

  1. شوکت اعوان
    شوکت اعوان
    6 months, 1 week ago

    ایٹمی جہنم بجھانے والا قرانی فارمولا
    تحریر علامہ محمد یوسف جبریلؒ
    قران حکیم نے نکتہ چینی اور عیب جوئی ،زر اندوزی اور مادہ پرستی اور اس زر اندوزی کے عمل کی ھمیشگی کے یقین کو ایٹمی جہنم کی پیدائش کا سبب قرار دیا ہے اور یقیناً یہ بیکنی کلچر انہیں خصوصیات کا بنیادی طور پر حامل ہے ۔ ایٹمی توانائی کا انکشاف اس تین سو سالہ مادہ پرستی کے عصر کے دوران متوازی چلتی ہوئی سائنس کے ارتقائی عمل کا ہی نتیجہ ہے لہذا قرآن حکیم کی اس منطق کی روشنی میں ایٹمی جہنم کو نابود کرنے کا جو فارمولا تیار کیا جا سکتا ہے ۔ وہ مندرجہ ذیل ہے۔
    ن دخ xح ر=2 (اج) ع ) م )(اج) ل+ س ف ک
    ن ہے نکتہ چینی، د ہے دولت اندوزی،خ ہے دولت اندوزی کے خلود یعنی ہمیشگی کا یقین ، ح ر 2 ہے آئن سٹائن کا ایم سی سکیوئرMC2 جس میں ایم M (ماس) یعنی حجم کے لئے ہے سی c روشنی کی رفتار کے لئے ہے۔ (ا ج) ع سے مراد ایٹمی جہنم عارضی یعنی اس فانی دنیا کا ایٹمی جہنم م موت کا پل ہے۔ (اج) ل اگلی دنیا کا لازوال اور دائمی ایٹمی جہنم قرانی حُطَمَہ ہے۔ اب اس کو ناکارہ کیا جا سکتا ہے۔( س ف ک) سے۔ س سے مراد سخاوت، جو نکتہ چینی اور عیب جوئی کی عادت کی قاطع ہے۔ ف سے مراد فقر ہے، وہی فقر جس کے متعلق پیغمبر اسلام حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم نے فرمایا۔ ’’ الفقر فخر ی ‘‘ ۔ یعنی فقر غریبی میرا فخر ہے ۔ یہ قاطع ہے دولت اندوزی اور حرص و ہوس کا اور ک سے مراد ہے انکسار جو اس دور کے مخصوص قسم کے انسانی غرور کا توڑ ہے۔ مجھے معلوم ہے کہ سائنس دان اپنے علم کی روشنی میں کبھی اس بات کا خیال بھی دل میں نہیں لا سکتا کہ کسی بھی صورت میں کوئی ایسا طریقہ ایجاد کیا جا سکتا ہے جو مثلاً ایٹم بم کو جام کر دے یا ایٹمی تابکاری کو بے ضرر بنا دے کیوں کہ ایسا ہونا ممکن ہی نہیں ۔ ایٹمی عمل بہت ہی زبردست چیز ہے اور انسانی کنٹرول سے باہر ہے۔ اس لئے اگر یہ دنیا ایٹمی جہنم کی تباہی سے بچنے کا ارادہ رکھتی ہے تو اس کے لئے سوائے اس کے کوئی چارہء کار نہیں کہ قرانی ہدایات پر مبنی کئے ہوئے اس متذکرہ فارمولے کو اپنانا ہو گا۔ آج یا کل یا سو برس کے بعد مگر جیسا کہ حضرت سعدیؒ نے فرمایا ہے کہ کرتا ناداں بھی وہی کچھ ہے جو دانا کرتا ہے مگر بہت ساری خرابی کے بعد۔ البتہ یہ فارمولا اپنانے کے بعد اس بیکنی ترقی اور اس بیکنی سائنس اور اس بیکنی کلچر کی کوئی گنجائش نہیں ہے ۔ کیا کیا جائے اس کے سوائے چارہ نہیں ۔
    علامہ یوسف جبریل،
    یوسف جبریل فاؤنڈیشن پاکستان
    قائد اؑ ظم نواب آباد واہ کینٹ ضلع راولپنڈی پاکستان
    www.oqasa.org
    Back to Conversion Tool

    Urdu Home
  2. shaukat awan
    shaukat awan
    8 months, 1 week ago

    محترم جناب حسن نثار صاحب !
    سلام منون !
    یہ امر میرے لئے باعثِ مسرت و افتخار ہے کہ روزنامہ جنگ راولپنڈی میں آپ کا کالم ’’ چوراہا‘‘ میری نظر سے گزرتا رہتا ہے ۔مجھے یہ کہنے میں کوئی عار نہیں ہے کہ آپ کی تحریروں نے میرے عقل و شعور پر تفکر و تدبر کے نت نئے در وا کئے ہیں۔آپ ملکی و بین الاقوامی حالات و واقعات پرعمیق نظری سے اظہار خیال کرتے ہیں۔آپ کا اسلوب اچھوتا اور منفرد انداز لئے ہوئے ہوتا ہے۔ اردو شاعری میں مستعمل اصطلاح تکرار اور توارد آپ کو چھو کر بھی نہیں گذری۔ آج تیس نومبر2010 ء آپ کا کالم ’’ چوراہا‘‘ نظر سے گذرا۔ جس میں آپ نے ہیروشیما کی تباہی کا دلدوز منظر کھینچ کر تاریخِ گذشتہ کے اوراقِ پریشاں سامنے لانے کی سعیء جمیلہ کی ہے۔ مقامِ حیرت ہے کہ اس قدر خالصتاََ سائنسی موضوع کو خوش سلیقگی سے انشائی طرز پر لکھنا آپ ہی کے قلم کا شاہکار ہو سکتا ہے۔ آپ نے معلوم سے نامعلوم اور نامعلوم سے معلوم کی طرف ایک جست لگائی ہے۔ جس سے یہ پتہ چلتا ہے کہ آپ قطرے میں دجلہ اور جزو میں کل دیکھ سکتے ہیں۔ پاکستانی قوم میں قومی راہنماؤں کی نابینا تقلید پرستی کو اس سے بہتر انداز میں ہدفِ تقلید نہیں بنایا جا سکتا تھا۔ کورچشم دانش ورانِ کرام اور ناعاقبت اندیش راہنماؤں کی کم نگاہی کو سامنے لانے کا کام اور ذہن و ضمیر کی آواز پر لبیک کہنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ فکری یولیدگی ، بے بضاعتی اور فرسودہ روایات کی تکرار محض سے ہٹ کر بین الاقوامی سطح پر سائنس کی تباہ کاریاں اور بالخصوص ایٹم بم کی ہولناکیوں کو سامنے لانا، لمحہء موجود کا ایک بین الاقوامی مسئلہ ہے۔ جسے ’’ چوراہا‘‘ میں سر عام یونائیٹڈ نیشنز کے منشور کی طرح اجاگر کیا گیا ہے۔ یہ امر آپ کے لئے باعثِ حیرت ہو گا کہ خطہء فردوس بریں جدید صنعتی شہر واہ کینٹ سے ابھرنے والی ایک اہم شخصیت علامہ محمد یوسف جبریلؒ نے بھی موجود دور میں ایٹم بم کی تباہ کاریوں کی طرف اپنی تصانیف میں واضح اشارے کئے ہیں ۔ وہ اسلحہ اور میزائلوں کی دوڑ کے خلاف ہیں اور امنِ عالم کے دعویدار بن کر نظر آتے ہیں۔ علامہ محمد یوسف جبریلؒ نے چودہ جلدوں میں قران حکیم کی سورۃ الھمزہ کے حوالے سے یہ ثابت کیا ہے کہ قران مجید میں بھی ایٹم بم کاذکر موجود ہے۔ جس میں ان کی دو جلدیں امریکہ میں بوالبا کمپنی نے Quran phenomenally characterises and averts it. (2) Quran predicts atomic hell. نے شائع کی ہیں اور باقی بارہ جلدیں ابھی اشاعت کے مرحلے میں ہیں۔ یہ کتابیں (سورۃ الھمزہ) ایٹم بم کی تباہی کو انتہاء کی خوبصورتی سے واضح کرتی ہیں۔ علامہ محمد یوسف جبریلؒ کی تمام کتب میں یہی نکتہ بالتصریح اجاگر کیا گیا ہے۔ ان کی چند ایک تصانیف مندرجہ ذیل ہیں :۔
    ۱۔فقر غیور ۲۔چڑیا گھر کا الیکشن ۳۔سر جیمز جینز کا نظریہء کائنات ۴۔فلسفہ تخلیق کائنات ۵۔اسلام کا معاشی نظام ۶ ۔اسلامی بم ۷۔ایٹمی جہنم بجھانے والا قرانی فارمولا ۸۔قدیم و جدید اٹامزم اور سائنس کی مثلث۔ ۹۔بیکن دجال، قران حکیم ، ایٹم بم اور اقبالؒ ۱۰۔سوزِ جبریل ۱۱۔نغمہء جبریل آشوب ۱۲۔خواب جبریل۱۳۔ روزنامہ نوائے وقت اور پاکستان ٹائمز میں سینکڑوں شائع شدہ مضامین ہیں۔علامہ محمد یوسف جبریلؒ نے دنیا بھر کے دو سو سے زائد سائنس دانوں کی ایٹمی جہنم سے پھیلنے والی تباہ کاریوں کی طرف توجہ مبذول کرائی ہے۔ جن میں اوپن ھیمر، ایڈورڈ ٹیلر، روٹبلیٹ، برٹرینڈ رسل و غیرہ شامل ہیں۔ علامہ صاحب کی تمام کتب www.oqasa.org پر موجود ہیں۔مزید تفصیلات کے لئے ڈاکٹر تصدق حسین نے’’ علامہ محمدیوسف جبریل اور حیات و خدمات‘‘ سے استفادہ کیا جا سکتاہے۔ اور ساتھ ہی میری کتاب کن فیکون میں بھی علامہ صاحب کی لائف ہسٹری مختصراََ بیان کی گئی ہے۔ اور اب ان کی لائف ہسٹری کی اشاعت تیار ہو رہی ہے۔ آپ کچھ ضرور ان پر لکھیں تاکہ انسانیت کو اس سے آگاہی مل جائے۔
    والسلام
    مخلص محمد عارف
    ایم اے پنجاب ( ایم فل) واہ کینٹ
    یوسف جبریل فاؤنڈیشن پاکستان
    قائد اعظم سٹریٹ نواب آباد واہ کینٹ ضلع راولپنڈی پاکستان
    allamayousuf.net
    www.oqasa.o rg
    Back to Conversion Tool

    Urdu Home